Majrooh Sultanpuri's Photo'

مجروح سلطانپوری

1919 - 2000 | ممبئی, انڈیا

ہندوستان کے ممتاز ترین ترقی پسند غزل گو شاعر۔ ممتاز فلم نغمہ نگار۔ دادا صاحب پھالکے اعزاز سے سرفراز

ہندوستان کے ممتاز ترین ترقی پسند غزل گو شاعر۔ ممتاز فلم نغمہ نگار۔ دادا صاحب پھالکے اعزاز سے سرفراز

مجروح سلطانپوری

غزل 53

اشعار 44

میں اکیلا ہی چلا تھا جانب منزل مگر

لوگ ساتھ آتے گئے اور کارواں بنتا گیا

دیکھ زنداں سے پرے رنگ چمن جوش بہار

رقص کرنا ہے تو پھر پاؤں کی زنجیر نہ دیکھ

ایسے ہنس ہنس کے نہ دیکھا کرو سب کی جانب

لوگ ایسی ہی اداؤں پہ فدا ہوتے ہیں

کوئی ہم دم نہ رہا کوئی سہارا نہ رہا

ہم کسی کے نہ رہے کوئی ہمارا نہ رہا

شب انتظار کی کشمکش میں نہ پوچھ کیسے سحر ہوئی

کبھی اک چراغ جلا دیا کبھی اک چراغ بجھا دیا

  • شیئر کیجیے

گیت 6

کتاب 17

تصویری شاعری 13

ویڈیو 20

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر
Mana shab-e-gham subh ki mehram to nahin hai

مجروح سلطانپوری

آہ_جاں_سوز کی محرومی_تاثیر نہ دیکھ

مجروح سلطانپوری

بہ_نام_کوچۂ_دل_دار گل برسے کہ سنگ آئے

مجروح سلطانپوری

بہ_نام_کوچۂ_دل_دار گل برسے کہ سنگ آئے

مجروح سلطانپوری

جب ہوا عرفاں تو غم آرام_جاں بنتا گیا

مجروح سلطانپوری

جلا کے مشعل_جاں ہم جنوں_صفات چلے

مجروح سلطانپوری

جلا کے مشعل_جاں ہم جنوں_صفات چلے

مجروح سلطانپوری

چمن ہے مقتل_نغمہ اب اور کیا کہیے

مجروح سلطانپوری

گو رات مری صبح کی محرم تو نہیں ہے

مجروح سلطانپوری

مجھ سے کہا جبریل_جنوں نے یہ بھی وحی_الٰہی ہے

مجروح سلطانپوری

ہم کو جنوں کیا سکھلاتے ہو ہم تھے پریشاں تم سے زیادہ

مجروح سلطانپوری

ہم کو جنوں کیا سکھلاتے ہو ہم تھے پریشاں تم سے زیادہ

مجروح سلطانپوری

ہم ہیں متاع_کوچہ_و_بازار کی طرح

مجروح سلطانپوری

ہمیں شعور_جنوں ہے کہ جس چمن میں رہے

مجروح سلطانپوری

ہمیں شعور_جنوں ہے کہ جس چمن میں رہے

مجروح سلطانپوری

آڈیو 52

آ نکل کے میداں میں دو_رخی کے خانے سے

آ نکل کے میداں میں دو_رخی کے خانے سے

آ ہی جائے_گی سحر مطلع_امکاں تو کھلا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

متعلقہ بلاگ

 

متعلقہ شعرا

"ممبئی" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI