Sufi Tabassum's Photo'

صوفی تبسم

1899 - 1978 | لاہور, پاکستان

صوفی تبسم

غزل 51

نظم 29

اشعار 18

اس عالم ویراں میں کیا انجمن آرائی

دو روز کی محفل ہے اک عمر کی تنہائی

دیکھے ہیں بہت ہم نے ہنگامے محبت کے

آغاز بھی رسوائی انجام بھی رسوائی

ایسا نہ ہو یہ درد بنے درد لا دوا

ایسا نہ ہو کہ تم بھی مداوا نہ کر سکو

دلوں کا ذکر ہی کیا ہے ملیں ملیں نہ ملیں

نظر ملاؤ نظر سے نظر کی بات کرو

آج تبسمؔ سب کے لب پر

افسانے ہیں میرے تیرے

قطعہ 17

رباعی 24

مضمون 1

 

کتاب 23

تصویری شاعری 3

 

ویڈیو 18

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر

صوفی تبسم

وفا کی آخری منزل بھی آ رہی ہے قریب

صوفی تبسم

تری محفل میں سوز_جاودانی لے کے آیا ہوں

صوفی تبسم

سکون_قلب و شکیب_نظر کی بات کرو

صوفی تبسم

نالۂ_صبا تنہا پھول کی ہنسی تنہا

صوفی تبسم

نظر کو حال_دل کا ترجماں کہنا ہی پڑتا ہے

صوفی تبسم

ہزار گردش_شام_و_سحر سے گزرے ہیں

صوفی تبسم

یہ کیا کہ اک جہاں کو کرو وقف_اضطراب (ردیف .. و)

صوفی تبسم

"لاہور" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے